وکی پیڈیا کے مطابق سندھ سے تعلق رکھنے والے پاکستان کے ممتاز سیاست دان اور دانشور جی ایم سید (غلام مرتضیٰ سید) 25 اپریل 1995ء کو انتقال کر گئے۔
آپ نے سندھ کو بمبئی سے علیحدگی اور سندھ کی پاکستان میں شمولیت کے حوالے سے ناقابلِ فراموش کردار ادا کیا تھا۔لیکن بعد میں 1971ء میں سقوطِ مشرقی پاکستان کے بعد سید صاحب نے اس وقت کے وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹو سے "سندھو دیش” کا مطالبہ بھی کیا تھا۔ آپ کو 30 سال قید رکھا گیا۔
19 جنوری 1992ء کو آپ کو آخری بار گرفتار کیا گیا اور موت تک آپ کا گھر "ذیلی جیل” قرار دے کر آپ کو نظر بند رکھا گیا۔